تھوڑی سی تنہائ ہے
اور بہت سی تاریکی
اب دل کے گہرے پیندے میں
اسکی یاد کی کھرچن ہے
سوچا ہے اترونگا اک دن
اور اسکو آپ مٹاؤنگا
پر اتنی محنت کون کرے
چھوڑو یادیں ہی تو ہیں
خود پڑے پڑے مٹ جائنگی


Arqum

7/2/2017

 

(9)

Share it :)Share on FacebookTweet about this on TwitterGoogle+share on TumblrPin on PinterestShare on LinkedInEmail to someone

Comments

comments

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *